427

قرضہ ایپس شہریوں کو کیسے دھمکایا جاتا ہے؟

آن لائن ایپس سے قرضہ لینے والے شہری رقم لینے کے بعد سکون کے بجائے بڑی مصیبت میں پھنس جاتے ہیں اور اپنی جمع پونجی سے بھی ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں۔

سوشل میڈیا پر قرضہ کی فراہمی کیلئے بہت ساری ایپس موجود ہیں جو لوگوں کو چھوٹے قرضے آن لائن فراہم کرتی ہیں، جو درحقیقت عوام کو لوٹنے کا جدید طریقہ ہے۔

ان ایپس کی جانب سے مختلف ناموں اور بروقت طریقوں سے قرضہ دینے کے اشتہار سوشل میڈیا پر چلتے ہیں جس میں قرضہ لینے والے خواہش مند افراد کو ایک سے دو دن میں قرضہ کی سہولت دینے کی پیش کش کی جاتی ہے اور پھر باقاعدہ لوٹ مار کا سلسلہ شروع کردیا جاتا ہے۔

ان ایپس پر نوے دن کا کہہ کر قرضہ دیا جاتا ہے اور ایک ہفتے بعد ہی کمپنی رقم کا تقاضا کرنا شروع کردیتی ہے اور نہ دینے کی صورت میں مغلظات اور رشتہ داروں کے نمبرز پر رابطہ کرکے ان کو بتانے، فیملی کی تصاویر اور کال ریکارڈ لیک کرنے کی دھمکیاں دی جاتی ہیں۔

نومی نامی شہری کا کہنا تھا کہ میں نے تمام اداروں میں میں درخواستیں دی ہیں لیکن کوئی بھی ادارہ ان کیخلاف کارروائی نہیں کررہا، اب تک سینکڑوں ایپس کام کررہی ہیں اور ان کو لائسنس ایس ای سی پی جاری کرتی ہے۔

متاثرہ شہریوں نے حکام بالا سے اپیل کی ہے کہ ان ایپس کیخلاف مؤثر کارروائی کرکے ان کے چنگل میں پھنس جانے والے لوگوں کی جاں خلاصی کی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں